یوم شہادت حضرت علی عقیدت و احترام سے منایا گیا

0
325

لکھنو؛ پیغمبر اسلام حضرت محمد کے داماد اور چچا ذاد بھائی و سنی مسلمانوں کے چوتھے اور شیعہ مسلمانوں کے پہلے امام حضرت علی ابن ابی طالب کا یوم شہادت عقیدت و احترام سے منایا گیا۔


پورے ملک میں آج کے روز امام علی کی شہادت کی یاد منائی گئی اور جگہ جگہ انکے تابوت کی شبیہ بر آمد کی گئی۔ چودہ سو سال قبل آج کے ہی روز کوفہ میں تین دن کے زخموں کے بعد انکی شہادت ہوئی تھی ۔ابن ملجم نامی دہشت گرد نے انکو ١٩المبارک کی صبح نماز کے دوران سر پر ضربت ماری تھی،


یو پی خصوصی طور سے لکھنو اور اودھ کے اطراف میں اس موقع پر بڑے بڑے جلوسوں کو بر آمد کیا جاتا ہے اور نوحہ خوانی و سینہ زنی ہوتی ہے۔ لکھنو میں سب سے بڑا اجتماع اور جلوس حسن مرزا کا تابوت ہے جہاں تین دن تک زبردست مجمع نظر آتا ہے اور ٢١ویں رمضان کی صبح تابوت اٹھا کر کربلا تالکٹورہ لے جایا جاتا ہے۔


صوبے کی ریاست محمود آباد میں بھی تین دن تک مجالس و ماتم جاری رہا اور آج صبح قلعہ محمود آباد سے جلوس بر آمد ہوا جس میں راجہ صاحب محمود آباد اور انکے بیٹے ڈاکٹر علی خان کے علاوہ خانوادے کے دیگر افراد نے شرکت کی۔ سوزخوانی و نوحہ خوانی کرتا ہوا یہ جلوس کربلا پہنچا جہاں تبرکات کو دفن کیا گیا۔