یوپی انتخابات: پہلے مرحلے کے لیے انتخابی مہم کا آخری دن، پندرہ اضلاع کی 73 سیٹوں پر ووٹ دیں گے

0
6
UP-POLL
1 of 4

لکھنؤ: اتر پردیش میں اسمبلی انتخابات کے پہلے مرحلے کی پولنگ 11 فروری کو ہوگا. اسمبلی انتخابات کے پہلے مرحلے میں مغربی اتر پردیش کے 15 اضلاع کی 73 سیٹوں کے لئے پروموشنل کا شور جمعرات شام تھم جائے گا. اس کے لئے تمام جماعتوں نے گزشتہ کچھ دن میں زوردار ریلیاں کی ہیں. پہلے مرحلے میں مغربی اتر پردیش کے شاملی، مظفر نگر، باغپت، میرٹھ، غازی آباد، گوتم بددھنگر، ہاپوڑ، بلند شہر، علی گڑھ، متھرا، ہاتھرس، آگرہ، فیروزآباد، ایٹہ اور كاسگج اضلاع میں پولنگ ہونا ہے. یہ کل 2.57 کروڑ لوگ 839 امیدواروں کی قسمت کا فیصلہ کریں گے. اس میں 1.17 کروڑ خواتین ہیں. مغربی یوپی کی 73 سیٹوں میں 24 سیٹوں پر سماج وادی پارٹی، 23 پر بی ایس پی، 12 پر بی جے پی، 9 پر آر ایل ڈی اور 5 پر کانگریس کا قبضہ ہے.

مغربی یوپی میں ‘اسکیم ‘ کے نکلے بہت مطلب

پی ایم نریندر مودی نے انتخابات سے پہلے میرٹھ میں 4 فروری کو ایک انتخابی ریلی میں SCAM کی نئی تعریف دی اور اس کا مطلب بھی وضاحت کی. انہوں نے کہا کہ یہ انتخابات SCAM کے خلاف بی جے پی کی جنگ ہے اور SCAM کا مطلب ہے S- سماج وادی، C- کانگریس، A- اکھلیش، M- مایاوتی. مودی نے کہا کہ جو کل تک جو ایک دوسرے کو گالیاں دیا کرتے تھے وہ اب گلے مل رہے ہیں. ان کا مقصد ایک دوسرے کے گھوٹالوں طرف غلطیوں کو چھپانا ہے.

وہیں، مودی پر جوابی حملہ کرتے ہوئے یوپی کے وزیر اعلی اکھلیش نے اسی دن اوريا SCAM کی ایک اور تعریف بتائی. ان کے مطابق، ملک کو واقعی SCAM سے بچانا ہے. A اور M سے جن کے نام آتے ہیں، ان سے بچانا ہے. ملک کو امت شاہ اور مودی سے بچانا ہے. اکھلیش نے SCAM کا نیا مطلب ‘Save the Country from Amit Shah and Modi’ بتایا.

ان دونوں کے بعد کانگریس نائب صدر راہل گاندھی بھی چپ کہاں رہنے والے تھے. انہوں نے بھی SCAM کی اپنی تعریف دے ڈالی. انہوں نے کہا، 5 فروری (اتوار) کو اکھلیش کے ساتھ کانپور میں اقوام جلسہ عام کے دوران SCAM کی اپنی تعریف گڑھيش راہل نے کہا SCAM میں S کا مطلب سروس، C مطلب كرےج، A کا مطلب اےبلٹي اور M مطلب موڈےسٹي ہے.

1 of 4