نيوزٹریك ڈاٹ کوم اور اپنا بھارت کا ایگزٹ پول : عوام کو کمل پسند ہے، ہاتھی کی چال دھیمی، محاذ اکثریت سے دور

0
14
1 of 26

یوگیش مشرا / انوراگ شکلا

لکھنؤ: ملک کے سب سے بڑی ریاست اتر پردیش میں سترہویں اسمبلی کی تشکیل کے لئے 75 اضلاع کی 403 اسمبلی سیٹوں پر انتخابات سات مراحل میں تمام ہو گئے. اسمبلی الیکشن 2017 کے انتخابی نتائج تو 11 مارچ کو ریاست کی سیاسی عبارت لکھیں گے پر ووٹ کے بعد کے ‘Newstrack.com اور اپنا بھارت نیوز پیپر’ کے سروے کے مطابق، بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) نہ صرف یوپی میں سب سے بڑی پارٹی ہوگی بلکہ وہ اکثریت کے جادوئی نمبر کو بھی پار کر سکتی ہے.

کسی بھی پارٹی یا اتحاد سے زیادہ سیٹیں جیت کر بی جے پی کی سیاسی حیثیت ریاست میں سب سے بڑی ہونے کے صاف اشارہ مل رہے ہیں. وہیں ایس پی کانگریس اتحاد دوسرے مقام پر ہو جائے گا، جبکہ مایاوتی کا ہاتھی زیادہ سیاسی پائےئدان نہیں چڑھ سکے گا. اسے تیسرے نمبر پر اکتفا کرنا پڑے گا. تاہم مایاوتی کے لئے اطمینان بخش پیغام یہ ہوگا کہ ان کا ووٹ فیصد زیادہ نہیں گرے گا.

1 of 26