اکھلیش کی تقریر،عوام سوچ رہے ہیں کس کو اقتدار سونپ دیا،مودی۔یوگی کی تنقید

0
47

لکھنؤ: سماجوادی پارٹی کے ریاستی سطح کا اجلاس آج لکھنؤ میں رامابای امبیڈکر میدان میں منعقد ہوا ہے. کانفرنس پارٹی کے سپرمو اکھلیش یادو پرچم کشائی کے ساتھ شروع ہوا. سماجوی پارٹی کی 8 ویں ریاستی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے، نیشنل صدر اکیھلیش یادو نے مرکز کی مودی حکومت اور ریاستی حکومت کی جانب اشارہ کیا.

ہفتہ 23 ستمبر کو لکھنؤ کے رامابای امبیڈکر میدان میں ایک کانفرنس میں اکھلیش یادو نے کہا کہ “دوسری حکومت کے 6 ماہ مکمل ہو چکے ہیں. جو لوگ بہت زیادہ ووٹ رکھتے ہیں اس کے بارے میں لوگ سوچ رہے ہیں۔ ریاستی حکومت کی طرف سے جاری کردہ وہائٹ پیپر جھوٹ کا پلندہ ہے۔ ہم نے دہلی حکومت کو ابھی تک اندازہ نہیں کیا تھا. ہم نے اس سے زیادہ کام کیا ہے. “

– اکھلیش یادو نے کہا، بی جے پی نے ابتدا میں بہت ڈھنڈورا پیٹا کہ بہت کام کر ڈالا مگر ہماری سرکار نے ان سے بہت زیادہ کام کیا تھا ۔
– “ہم چاہتے ہیں کہ بلیا ایکسپریس وے لانا چاہتے تھے۔. اگر ہماری حکومت قائم رہتی تو پہلے روز ہی اسکا کام شروع کردیا گیا ہوتا۔

بی جے پی والے اس سڑک کو نہیں بنا سکتے. وزیراعظم اس سڑک کو نہیں بنا سکتے.
دنیا کی ترقی کے لئے بہتر سڑک ضروری ہے. ہمارے کسانوں اور کاروباری افراد اس سے فائدہ اٹھاتے ہیں. “

میٹرو پر مودی کو لیا آڑے ہاتھوں
اکھلیش نے میٹرو کا حوالہ دیتے ہوئے کہا، “میٹرو کے سلسلے میں لوگوں نے ​​کہا کہ وزیراعظم کا خواب پورا ہو رہا ہے.
– لکھنؤ میں وزیراعلی کا خواب پورا کرنے والا وارانسی میں میٹرو کب چلا پائیں گے؟ بی جے پی کی حکومت میں، میٹرو کسی بھی دوسرے شہر میں چلنے والی نہیں ہے. “

پارٹی کا آڈٹ کانفرنس میں پیش کیا گیا تھا.

قرض کی چھوٹ پر بھی “جن لوگوں نے کسانوں کے قرض کو معاف کرنے کا وعدہ کیا تھا،انہوں نے اپنی پہلی کابینہ میں خود کو دھوکہ دیا ہے. سب سے پہلے، کسانوں کو علیحدہ کردیا اور پھر ایک معمولی رقم دیکر سرٹیفکیٹ دے دئے۔. یہ اس سے بہتر تھا دیتے ہی نہیں۔ ”
“یہ بجلی کی سہولت نہیں دے پا رہے ہیں . 102، 108 ایمبولینس بند ہوگئے. گاؤں کے لوگوں کا تھانے میں استحصال نہ ہواس لئے 100 نمبر لایا تھا. “

انہوں نے کہا، “ان لوگوں نے جان بوجھ کر دھوکہ دہی کے لئے ووٹ دیا. وزیراعظم نے کہا تھا کہ نوٹ بندی سے بد عنوانی اور دہشت گردی پر لگام لگے گی۔ “