اشوک پنڈت نے شہلا راشد پر کیا قابل اعتراض تبصرہ، بیٹی بولی آپ کے والد کہنے پر مجھے شرم آ رہی

0
65
1 of 2

جے این یو سے لے کر دہلی یونیورسٹی تک کا تنازعہ تھمنے کا نام نہیں لے رہا ہے. آئے دن کسی نہ کسی مشہور پروفائل کا نام اس سے منسلک طالب علموں پر اپنی الگ الگ رائے رکھنے کو لے کر آ ہی جا رہا ہے.

اب اس فہرست میں نیا نام جڑا ہے فلم ساز اور سینسر بورڈ کے رکن اشوک پنڈت کو جنہوں نے ٹویٹر پر جے این یو کی طالبہ شہلا راشد پر انتہائی قابل اعتراض تبصرہ کیا ہے.

دراصل اشوک پنڈت اس بیان پر بھڑکے ہوئے تھے جس شہلا نے انہیں اور سینسر بورڈ کے چیئرمین پهلاج نہلانی کو سنگھی بتاتے ہوئے سینسر بورڈ پر عورت پر مبنی فلموں پر پابندی لگانے کا الزام لگایا تھا.

شہلا نے یہ الزام اپنے ٹویٹر اکاؤنٹ سے ایک ٹویٹ کرکے لگایا تھا. جس پر تلملائےاشوک پنڈت نے ساری عزت کو طاق پر رکھتے ہوئے شہلا راشد کی ٹویٹس کو ریٹویٹ کیا کہ بھارت مخالف نعرے لگانے اور دہشت گردوں کے ساتھ سونے سے بہتر ہے کہ سنگھی ہو.

Read more>>>>

1 of 2