پاکستان کے سابق قومی سلامتی کے مشیر کا انکشاف، پاک دہشت گرد گروپ نے کیا تھا ممبئی حملہ

0
6

نئی دہلی: پاکستانی سرزمین سے بھارت میں دہشت گردی پھیلانے اور حملے کرنے کے بھارتی دعوے ثابت ہوگئے ہیں. پاکستان کے سابق قومی سلامتی کے مشیر محمود درانی نے اسے خود قبول کیا ہے. درانی نے ممبئی میں ہوئے 26/11 دہشت گردانہ حملے کے بارے میں اعتراف کیا ہے کہ یہ حملہ پاکستان بیسٹ ایک دہشت گرد گروپ نے کیا تھا. یہ بیان انہوں نے ایشیائی سیکیورٹی کانفرنس میں دیا.

mumbai attack

کانفرنس میں قبول
نئی دہلی میں منعقد تین روزہ 19 ویں ایشیائی سیکیورٹی کانفرنس میں محمود علی درانی نے کہا کہ ممبئی پر ہوا 26/11 دہشت گرد حملہ پاکستان واقع دہشت گرد تنظیم نے انجام دیا تھا. یہ پہلا موقع ہے، جب سابق میں پاکستان کی سلامتی سے منسلک رہے کسی اعلی افسر نے یہ اعتراف کیا ہے. تاہم، پاکستان اس حملے کے ثبوت کے طور پر ہندوستان کی جانب سے کئے گئے دعووں کو نكارتا رہا ہے.

mumbai attack
اس حملے میں بھارت نے دہشت گرد قصاب کو زندہ پکڑا تھا، جسے بعد میں پھانسی دی گئی تھی. درانی نے یہ بھی کہا کہ پاکستان کو جماعت الدین دعوی کے دہشت گرد حافظ سعید کے خلاف کارروائی کرنی چاہئے.

mumbai attack

خطرے سے نمٹنے پر بحث
بھارت کے وزیر دفاع منوہر پاریکر نے کہا کہ بھارت کئی دہائیوں سے پراکسی جنگ کا شکار رہا ہے. پاریکر نے دہشت گردی کو بین الاقوامی سلامتی اور امن کے لیے خطرہ بتایا. کانفرنس میں افغانستان کے قومی سلامتی کے مشیر محمد حنیف نے افغانستان اور پاکستان بارڈر پر دہشت گرد اڈوں کو لے کر فکر ظاہر کی.
ایشیائی سیکیورٹی کانفرنس کے آغاز 1999 میں ایشیائی سلامتی کے سامنے خطرے اور ان سے نمٹنے کے اقدامات پر بحث کے لیے ہوئی تھی. اس سال کا موضوع ہے-كمبےٹگ ٹیررزم: اولوگ عین ایشین رسپانس.

mumbai attack