بھارت نے اٹاری بارڈر پر لہرایا 360 فٹ بلند ترنگا، پاک نے اسے بین الاقوامی معاہدوں کی خلاف ورزی بتایا

0
29

امرتسر: بھارت اور پاکستان کے اٹاری بارڈر پر اتوار (5 مارچ) کو بھارت کا 360 فٹ بلند ترنگا لہرایا گیا. جس کے بعد سے پاک سرحد میں کھلبلی مچی ہوئی ہے. اسے شک ہے کہ ترنگے سے پاک بھارت کی جاسوسی کر سکتا ہے.

ساڑھے تین کروڑ کی لاگت سے بنا ترنگا
-ترنگا 120 لمبا اور 80 فٹ چوڑا ہے.
-اسكی تعمیر پر 3.50 کروڑ روپے کا خرچ آیا ہے.
-یہ پنجاب حکومت کے امرتسر بہتر ٹرسٹ اتھارٹی کی منصوبہ تھا.

-پجاب کے وزیر انل جوشی نے سب سے اونچے فلیگ ماسٹ پر ملک کا سب سے بڑا ترنگا لہرایا.
-اسسے پہلے جھارکھنڈ کے رانچی میں سب سے طویل 293 فٹ بلند ترنگا لہرایا جا چکا ہے.

بھارتی ترنگے سے پاک سرحد میں خوف کا ماحول
-بین اقوامی سرحد پر ترنگا لہرانےجانے سے پاکستان خوش نہیں ہے.
-ذرائع کا کہا ہے کہ پاکستان رینجرز نے سرحدی سلامتی فورس (بی ایس ایف) کو اپنی ناراضگی کا اظہار کر دیا ہے.
-پاكستان نے اسے بین الاقوامی معاہدوں کی خلاف ورزی قرار دیا ہے.
-پاكستان کے حکام کو خدشہ ہے کہ بھارت اس پھلےگماسٹ کا استعمال جاسوسی کے لئے کر سکتے ہیں.

بھارت نے پاکستان کو دیا یہ جواب
-بھارتي حکام نے پاکستان کو جواب دیتے ہوئے کہا کہ پھلےگماسٹ زیرو لائن سے پہلے 200 میٹر پہلے قائم کیا گیا ہے، اس سے کسی بھی قسم کی خلاف ورزی نہیں ہوا ہے.
-متري انل جوشی نے کہا کہ یہ ہمارا قومی پرچم ہے، اور کوئی بھی ہمیں اپنی سرزمین پر اسے لہرانے سے روک نہیں سکتا ہے.