یوگی حکومت نے اب تو حد کردی، … حج ہاوس کو بھی بھگوا رنگ دیا

0
89

لکھنؤ:اتر پردیش میں سیاست اب ایسی ہو رہی ہے جس سے دوسرے مسلک اور فرقہ کو غم و غصہ ہے۔ یوپی کی سیاست میں غضب کا رنگ بکھیر رہا ہے. سڑکیں بس، میونسپل کی آٹوموبائل، ہاسپٹل میں بھگوا رنگ کی چاردیں اور اینیکسی یعنی وزیر اعلی کے دفتر کو بھگوا رنگ میں رنگنے کے بعد حج ہاوز پر بھگوا رنگ چڑھایا جا رہا ہے.

پہلےرنگ سفید اور سبز تھا، حج ہاؤس کی عمارت. اب اسے افسران یا حکومت کا اشارہ کیا کہا جائے گا۔ رنگ تبدیل کرنے سے سرکاری دفاتر سیاست کا نیا مرکز بن رہے ہیں.

خوشگوار رنگا رنگی نظر کہہ کر خوبصورت رنگ تبدیل ہوتا ہے. . یو پی کے افسران نے وزیراعلی یوگی ادیتھناتھ کے کپڑوں سے بہت متاثر ہوئے ہیں. سب سے پہلے ان کے صوفے کے غلاف سے لے کر انکی ہرجگہ بھگوا رنگ چڑھایا گیا، جس پر وزیر اعلی کی نظر پہلے پڑ سکتی تھی. ہاسپٹل میں چادریں بھگوا ہوئی تو بی پی ایل بس سروس میں شامل بسوں کے رنگ کو بھگوا کر دیا گیا. رنگ تبدیل کرنے میں مہارت رکھتا نوکرشاہوں نے میونسپل کی گاڑیوں کا رنگ تبدیل کیا۔وزیراعلی کے پرانے دفتر یعنی لال بہادر شاستری بھون انیکسی کی دیواروں کو بھگوا رنگ میں رنگا ہوا گیا.

اب رنگ تبدیل ان عمارتوں کی بحث ٹھنڈی ہو چکی تھی، جس کے بعد یوگی کے پسندیدہ بھگوا رنگ میں حج ہاوز پر چڑھایا جا رہا ہے. اس طرح کے وقت حج کے دفتر کا رنگ تبدیل ہوجاتا ہے. جب یوپی کے ہر چھوٹے معاملے میں سیاست میں ہے. ٹرپل طلاق پر نئے بل، بغیر محرم عورتوں کے حج پر لے جانے کے فرمان کے بعد اب یوپی میں حج ہاوز پر بھگوا رنگ پر سیاست کرنے کا فیصلہ مانی جا رہی ہے. حزب اختلاف کی جماعتوں کے علماء سے، وہ ان کے اعتراضات کا اظہار کر رہے ہیں، اور یہ مذہبی جذبات کو مجروح کرنے کا کام ہے۔

Facebook Comments