باندہ جیل میں قید مختار انصاری،بیوی کو دل کا دورہ،زہر کا اندیشہ

0
36

لکھنؤ: ایم ایل اے مختار انصاری کو باندہ جیل میں دل کا دورہ پڑا ہے. ان کی بیوی کو بھی جیل میں ملنے کے دوران دل کا دورہ پڑا۔ اب سوال یہ ہوتا ہے کہ،مختار انصاری کو جیل میں زہر دیا ہے، یا انکو جیل کے باہر زہر دیا گیا تھا؟ مختار انصاری کی اچانک بیماری کے بعد، جو جیل میں قید تھے، انہیں باندہ اسٹیٹ ہاسپٹل میں داخل کیا گیا تھا.

اس کے بعد انکوعلاج کے لئے کانپور سے لکھنؤ پی جی آئی بھیجا گیا . پی جی آئی میں ان کا علاج شروع ہوا ہے. ڈاکٹروں کو الرٹ پر رکھا گیا ہے.

اطلاعات کے مطابق، انکی بیوی مختار انصاری سے ملاقات کرنے باندہ جیل میں آئی تھیں، انہوں نے منگل (جنوری 09) کو ان سے ملاقات کی تھی. یہ اندیشہ ہے کہ زہر ان کی چائے میں ملا تھا. اس وجہ سے، انصاری کے شوہر اور بیوی کے دل پر حملہ ہوا. جیل حکام نے انکو بلا تاخیر اسپتال بھیج دیا ۔ اس واقعے کے بعد تمام قیدیوں کو بیرکوں سے الگ کیا گیا ہے. جیسے ہی یہ خبر جیل سے باہر آئی، ان کے حامیوں نے اسپتال کے باہر جمع ہعنا شروع کردیا۔ضلع حکام کی بڑی تعداد بھی اسپتال پہنچ گئی ہے۔

جیل سپرنٹنڈنٹ کے مطابق، ‘مختار انصاری اور ان کی بیوی کی نازک حالت کو دیکھتے ہوئے انہیں باندہ سرکاری اسپتال سے کانپور کے هیلٹ ہاسپٹل ریفر کیا گیا ہے.’

چیف سکریٹری اروند کمار نے مختار انصاری کے دل کے حملے کے بارے میں باندہ کے کلکٹر، ایس ایس پی کی مشترکہ رپورٹ طلب کی ہے. انہوں نے کہا کہ، یہ معلومات یہ ہے کہ انصاری جوڑے کو طبی میڈیکل کالج کونپور منتقل کردیا گیا ہے. چیف سکریٹری نے بھی ان کے علاج کیلئے تمام ممکنہ امداد فراہم کرنے کے بارے میں بھی بات کی.