نتیش بگاڑ سکتے ہیں اتحاد کی ‘طبعیت’

0
110
Vinod Kapoor

ونود کپور

لکھنؤ: امکان تو تھا، کہ لالو پرساد کے راشٹریہ جنتا دل (آر جے ڈی) ممبران اسمبلی کی 10 جولائی کی میٹنگ میں کوئی بڑا فیصلہ ہوگا لیکن ایسا کچھ نہیں ہوا. اجلاس میں نہ تو لالو پرساد کے خاندان پر لگے الزامات اور سی بی آئی کی ایف آئی آر پر بحث ہوئی اور نہ بہار کے نائب وزیر اعلی تیجسوی یادو پر.

دراصل، نتیش کمار نے اتوار کی شام ایک بیان دے کر لالو پرساد یادو کو دفاعی موڑ پر کھڑاکر دیا. نتیش کمار نے اتوار کی شام کہا کہ ان کی طبیعت اب ٹھیک نہیں لہذا منگل کو ہونے والی ممبران اسمبلی کی میٹنگ اب نہیں ہو گی.

ہنگامی اجلاس کی ضرورت ہی کیا تھی؟
آر جے ڈی اراکین اسمبلی کے اجلاس میں اسی لحاظ سے وپچارکتا نقصان کیا گیا اور کہا گیا، کہ ’27 اگست کو ہونے والی اپوزیشن جماعتوں کی ریلی کے بارے میں تبادلہ خیال کیا گیا. ‘اب سوال یہ ہے کہ اگر بحث ریلی پر ہی ہونی تھی تو ہنگامی اجلاس بلانے کی کیا ضرورت تھی؟

تیجسوی کے خلاف چارج شیٹ داخل نہیں
اجلاس کے بعد آر جے ڈی کے ایم پی جے پرکاش یادو نے کہا، کہ ‘بحث ریلی اور اس تیاری کو لے کر ہوئی. سی بی آئی کی ایف آئی آر کے باوجود شاندار اپنے عہدے سے استعفی نہیں دیں گے. سی بی آئی نے ایف آئی آر درج کی ہے کوئی چارج شیٹ نہیں داخل کیا ہے. ‘

سب نے پوچھا حال، سوائے نتیش کے
کانگریس تو پہلے ہی سی بی آئی کے چھاپے کو لے کر لالو پرساد یادو کے ساتھ کھڑی ہے. کانگریس صدر سونیا گاندھی، مغربی بنگال کی وزیر اعلی ممتا بنرجی نے چھاپے کے بعد لالو پرساد یادو سے بات کی تھی. لیکن نتیش کمار یا ان کی پارٹی کے کسی لیڈر نے لالو پرساد یادو سے نہ تو فون پر بات کی اور نہ کوئی بیان ہی دیا.

‘حکومت’ بیمار
نتیش کی خاموشی مسلسل لالو کی پریشانی کا سبب رہی ہے. نتیش کو پیر کو ان کی سرکاری رہائش گاہ پر عوامی ڈائیلاگ بھی کرنا تھا لیکن ان کی بیماری کی وجہ سے اسے منسوخ کر دیا گیا ہے. نتیش اب جب ٹھیک ہو جائیں گے تب ممبران اسمبلی کی میٹنگ کی تاریخ طے ہوگی.

شرد ایک بار پھر لالو کے ساتھ
لالو یادو کی پریشانی کو دیکھتے ہوئے جنتادل یو (جے ڈی یو) کے سابق صدر شرد یادو ان کے ساتھ آئے اور کل کہا، کہ ‘سی بی آئی کا تعداد مخلوط حکومت کو پریشان کرنے کے لئے ہے.’ بتا دیں کہ شرد یادو، لالو کے حامی ہیں . سال 1990 میں لالو کو سی ایم بنانے میں ان کی بڑی کردار تھا. اس وقت زیادہ تر ممبران اسمبلی کی حمایت رام سندر داس کے ساتھ تھی جو دلت تھے. لیکن شرد یادو کی وجہ ممبران اسمبلی کے ہوئے انتخابات میں لالو پرساد یادو جیت گئے اور رام سندر داس کو شکست کا سامنا کرنا پڑا.

بے سبب نہیں ہے لالو کا دفاعی ہونا
ممبران اسمبلی کی میٹنگ میں لالو پرساد کا دفاعی ہونا بلا اشتعال نہیں ہے. وہ فیصلے کی گیند نتیش کے پالے میں رکھنا چاہتے ہیں. دراصل، تیجسوی کے استعفی کو لے کر بی جے پی کافی جارحانہ ہے. وہ مسلسل نتیش پر اس کا دباب بنا رہی ہے. بی جے پی کا دباب اور نتیش کی خاموشی مسلسل لالو پرساد کو پریشان کر رہی ہے. سیاست کے ماہر کھلاڑی نتیش اب اپنی بیماری کے بہانے خاموش ہیں.