کیلاش ستیارتھی کے گھر چوری، کیش اور زیورات کے ساتھ نوبل پرائز کی نقل بھی غائب

0
6
kailash satyarthi

نئی دہلی: نوبیل پرائز ونر کیلاش ستیارتھی کے گھر پیر کی رات چوری کی خبر سامنے آئی ہے. چور نہ صرف ان کے قیمتی اشیاء اور دستاویزات لے گئے بلکہ نوبل انعام کی رےپلكا بھی اٹھا لے گئے. اتنا ہی نہیں چوروں نے گھر سے کچھ اور زیورات -جےورات اور کیش پر بھی ہاتھ مار لیا ہے.

کب ہوئی واردات؟
-چوري کی واردات کیلاش ستیارتھی کے کالکا جی واقع کیلاش کالونی کے اراولی اپارٹمنٹ میں پیر کی رات ہوئی.
– چوروں نے لاکھوں کے سامان پر ہاتھ صاف کر دیا. واردات والی رات کیلاش ستیارتھی کے گھر پر تالا لگا ہوا تھا.
-چوروں نے بند گھر کا تالا توڑ زیورات اور پیسوں پر ہاتھ صاف کر دیا.
-تنا ہی نہیں جاتے جاتے چور کیلاش ستیارتھی کے نوبل انعام کی ریپلكا بھی اپنے ساتھ لے گئے. کیلاش ستیارتھی فی الحال بیرون ملک ہیں. پولیس معاملے کی تفتیش کر رہی ہے.

کون ہیں کیلاش ستیارتھی؟
-كیلاش ستیارتھی سوشل ورکر اور ‘بچپن بچاؤ تحریک’ کے بانی صدر ہیں.
-وو اب تک 80 ہزار سے زیادہ بچوں کی زندگی بدل چکے ہیں.
-١١ جنوری 1954 کو پیدا ہوئے کیلاش ستیارتھی نے بھوپال گیس سانحہ کے ریلیف مہم میں بھی حصہ لیا تھا.

مل چکے ہیں یہ ایوارڈ
-٢٠٠٩ میں ستیارتھی کو ڈےپھےڈر آف ڈیموکریسی ایوارڈ (امریکہ) ملا تھا.
-٢٠٠٨ میں الپھاسو كومن انٹرنیشنل ایوارڈ (سپین) ملا تھا.
٢٠٠٧ میں تمغہ آف دی اٹالین سےناٹے (Medal of the Italian Senate) اعزاز سے نوازے گئے تھے. اس کے بعد 2014 میں انہیں نوبل دیا گیا تھا.

اس سال ملا تھا نوبل پرائز
-بچوں کے حقوق کی آواز اٹھانے والے کیلاش ستیارتھی کو دسمبر 2014 میں امن کا نوبل انعام ملا تھا.
– ان کے ساتھ پاکستان میں لڑکیوں کی تعلیم کی سمت میں کام کرنے والی ملالہ يوسپھجي کو بھی مشترکہ طور پر یہ اعزاز دیا گیا تھا.
– ‘بچپن’ نام کی ایک این جی او کے ذریعے کیلاش اور ان کی ٹیم بچوں کے حقوق کے لئے کام کرتی ہے.