الیکشن کمیشن میں ملائم نے ‘سائیکل’ پر کیا اپنا دعوی، کہا ایک آدمی ہمارے لڑکے کو بہکا رہا

0
13
mulayam

نئی دہلی: سماج وادی پارٹی میں چل رہی اتھل پتھل جاری ہے. اقتدار سے تنظیم تک کی لڑائی اب پارٹی سمبل تک آ پہنچی ہے. ایس پی میں چل رہے اسی گھمسان ​​کے درمیان ملائم سنگھ یادو انتخابی نشان ‘سائیکل’ پر اپنا حق جتانے کے لئے پیر (9 جنوری) کو دہلی واقع الیکشن کمیشن کے آفس پہنچے. ان کے ساتھ امر سنگھ اور شیو پال یادو بھی تھے. الیکشن کمیشن میں میٹنگ تقریبا ڈیڑھ گھنٹے تک جاری رہی. ادھر، اکھلیش گروپ بھی سائیکل پر اپنا دعوی ٹھوكنے کے لئے الیکشن کمیشن پہنچا ہیں. بتا دیں کہ الیکشن کمیشن نے دونوں اطراف (اکھلیش-ملائم) کو سائیکل سمبل تنازعہ پر 9 جنوری تک حلفنامہ دینے کو کہا تھا.

الیکشن کمیشن کے سامنے ملائم گروہ نے رکھی یہ باتیں …
-ذرائع کے مطابق، نرم نے الیکشن کمیشن میں کہا کہ پارٹی کے آئین کے مطابق، قومی اجلاس میں قومی صدر کو ہٹایا نہیں جا سکتا.
-راشٹريي اجلاس بلانے کے لئے 30 دن کا نوٹس دینا ضروری ہے.
-جسكا فالو 1 جنوری کے اجلاس میں نہیں کیا گیا.
-نئے صدر کے انتخابات کے لئے کاغذات نامزدگی کا عمل ضروری ہے.
-جسسے تمام لوگوں کو اس کے لئے برابر موقع مل سکے، اس کا عمل نہیں کیا گیا.
-رام گوپال یادو پہلے ہی جنرل سکریٹری کے عہدے سے ہٹا دیے گئے تھے.
-وہ وجہ سے وہ کوئی تجویز نہیں لا سکتے.
-ملايم سنگھ کو قومی صدر کے عہدے سے ہٹانے کے لئے کوئی تجویز پاس نہیں کیا گیا.
-٢ جنوری کو بلایا گیا اجلاس غیر آئینی ہے اور اس میں لیے گئے سارے فیصلے بھی فرضی ہیں.

الیکشن کمیشن سے نکلنے کے بعد ملائم نے کیا کہا؟
-ملايم سنگھ نے کہا کہ پارٹی سمبل پر فیصلہ کمیشن کرے گا.
-همنے اپنی بات الیکشن کمیشن کے سامنے رکھ دی ہے.
-ملايم نے پروفیسر رام گوپال کا نام لئے بغیر کہا کہ صرف ایک ہی آدمی کی وجہ سے پارٹی میں تنازعہ ہے.
-سي نے ہمارے بیٹے اکھلیش کو بہکا دیا ہے.
-ملايم نے کہا کہ اکھلیش ہمارا بیٹا ہے اور ہمارے درمیان سب کچھ ٹھیک ہے.
-ملايم سنگھ نے کہا کہ پارٹی میں کوئی اختلافات نہیں ہیں.
-جو تھوڑے بہت ہیں وہ جلد ہی حل لئے جائیں گے.

رام گوپال بھی گئے الیکشن کمیشن
-ملايم سنگھ یادو کے بعد اکھلیش گروہ کی جانب سے پروفیسر رام گوپال یادو بھی الیکشن کمیشن پہنچے.
-رام گوپال یادو نے کہا کہ ہم نے کمیشن سے یہ گزارش کی ہے کہ وہ جلد از جلد تنازعہ کا تصفیہ کر دیں.
-كيونکہ کچھ ہی دن میں نامزدگی کا عمل شروع ہو جائے گی.
-حالانکہ انہوں نے ملائم سنگھ کے بیان پر ردعمل دینے سے یہ کہتے ہوئے انکار کر دیا کہ میں نیتا جی کے بیان پر کچھ نہیں کہوں گا.

رام گوپال نے کہا کہ سائیکل تو اکھلیش کی ہی ہے
پارٹی کے انتخابی نشان سائیکل پر اکھلیش یادو کا حق ہونے کی بات کرتے ہوئے رام گوپال نے کہا کہ جس کے پاس اکثریت گے ساكلسي کی ہوگی. اکثریت اکھلیش یادو کے ساتھ ہے، اس لئے انتخابی نشان سائیکل انہیں ہی ملنا چاہئے.

راجیہ سبھا کے چیئرمین کو ملائم نے لکھا خط
-ملايم نے راجیہ سبھا کے چیئرمین کو خط بھی لکھا ہے.
-جسمے انہوں نے پروفیسر رام گوپال یادو سے راجیہ سبھا میں ایس پی کے لیڈر کی حیثیت واپس لئے جانے کا مطالبہ کیا ہے.
-سكے علاوہ ان سیٹ میں بھی ایک آزاد امیدوار کے طور پر تبدیلی کرنے کو کہا گیا ہے.
-قابل ذکر ہے کہ پروفیسر رام گوپال یادو سماج وادی پارٹی کے راجیہ سبھا ممبر پارلیمنٹ بھی ہیں.

ملائم نے کہا کہ میں ہی ہوں پارٹی کا قومی صدر
-ملايم سنگھ نے اتوار (8 جنوری) کو دہلی میں ایک پریس کانفرنس کی.
-اس میں انہوں نے کہا تھا کہ میں ہی پارٹی کا قومی صدر ہوں، شیو پال ریاستی صدر ہیں اور اکھلیش یادو وزیر اعلی ہیں.
-ملايم نے کہا کہ ہم نے رام گوپال کو 30 دسمبر کو چھ سال کے لئے پارٹی سے نکال دیا تھا.
-رام گوپال نے جو کانفرنس منعقد کی تھی، وہ غیر آئینی اور جعلی ہے.

نریش اگروال نے امر سنگھ پر سادھا نشانہ
نریش اگروال نے امر سنگھ کو لے کر چھڑ رہے تنازعہ پر کہا کہ جنہیں پارٹی اور خاندان توڑنے کا تجربہ ہے، جنہیں اس کام میں مہارت حاصل ہے، اب میں اس معاملے میں ان کے بارے میں کیا کہوں.