بنارس : بی ایچ یو کیمپس لاٹھی چارج مسئلہ بنا

0
45

وارانسی: بي ایچ یو میں دیر رات تقریبا 11 بجے وائس چانسلر ہاؤس پر مظاہرہ کر رہی طالبات پر پولیس نے لاٹھی چارج كياهے. پولیس کو بی ایچ یو مین گیٹ پر بیٹھیں طالبات مبزور طاقت وہاں سے بتانے کی کوشش کی۔ چھیڑھانی کی مخالفت میں جمعہ کی صبح سے بي ایچ یو کے لنکا گیٹ پر بیٹھی طالبات پر پولیس نے لاٹھی چارج کیا تھا جس کے بعد مشتعل طلبا نے پولیس پر پتھراؤ کیا. طالب علموں نے بھی کئی گاڑیوں میں بھری ہوئی اور یہاں تک کہ پیٹرول بم بھی کیمپس میں پھینک دیا. بی ایچ او کیمپس میں بہت سے پولیس اسٹیشنوں کو تعینات کیا گیا ہے کیونکہ حال ہی میں ان کا سامنا کرنا پڑتا ہے.

پولیس لاٹھی چارج میں کئی زخمی
لاٹھی چارج میں تقریبا ایک درجن لڑکیوں کو سختی سے زخمی کیا گیا تھا. اس میں ایک صحافی بھی بری طرح زخمی ہو گيا
زخمیوں کا علاج بي ایچ یو اسپتال میں چل رہا ہے. طلباء کے پتھراو سے چار پولیس اہلکارزخمی بھی ہوئے.
لڑکیوں کو الزام عائد کیا گیا ہے کہ کچھ لڑکیاوں کو کمروں میں بند کردیے گئے ہیں.
– حالات کو دیکھ کر انتظامیہ نے 2 اکتوبر تک کالج بند کر دیا ہے.

دراصل، ہنگامہ اس وقت ہوا جب دھرنے پر بیٹھی طالب علموں کے ایک گروپ بي ایچ یو وائس چانسلر کی رہائش گاہ گھیرنے جا رہے تھے. گزشتہ 35 گھنٹوں سے اپنی چھیڑ خانی سے پریشان طالبات دھرنے پر بیٹھی ہیں لیکن وائس چانسلر ان کے پاس نہیں آئے ہے.

ہفتہ کو ان کے اس دھرنے کی حمایت میں طالب علم بھی آ گئے بی ایچ یو میں حالات اب بھی کشیدہ بنے ہوئے ہے.