اتر پردیش کو ملےدو نائب وزیر اعلی، کیشو موریا اور دنیش شرما کو ملا انعام

لکھنؤ: اتر پردیش میں اس بار دو نائب وزیر اعلی بنائے گئے ہیں. پہلے ہیں، بھارتی جنتا پارٹی کے ریاستی صدر کیشو موریا اور دوسرے ہیں پارٹی کے قومی نائب صدر اور لکھنؤ کے میئر دنیش شرما. یہ دونوں پارٹی رہنما اترپردیش کے نئے وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ کے ساتھی کے طور پر کام کریں گے.

کیشو موریا
الہ آباد کے پھول پور سے ممبر پارلیمنٹ کیشو موریا کو انتخابات کے دوران پارٹی کو ایک فارمولے میں باندھے رکھنے اور پارٹی کی جیت میں اپنا کردار ادا کرنے کا کریڈٹ جاتا ہے.
2014 میں رکن پارلیمنٹ منتخب ہونے سے پہلے وہ سراتھو علاقے سے اسمبلی رکن تھے.

کوشامبی کے سراتھو میں 1968 میں پیدا ہوئے کیشو کا آر ایس ایس سے تعلق رہا ہے. انہوں نے الہ آباد یونیورسٹی سے بی اے کیا ہے.
کیشو موریا کو وزیر اعظم نریندر مودی کی پسند سمجھا جاتا ہے.

uttar pradesh

ابتدائی دنوں میں کیشو موریا یونین کے شہر كاريواه اور وی ایچ پی میں صوبہ تنظیم وزیر کا کردار ادا کر چکے ہیں.
وہ گوركشا تحریک اور رام جنم بھومی تحریک سے بھی منسلک رہے.
بی جے پی میں وہ بیک ورڈ کلاس سیل اور کسان مورچہ کے کوآرڈینیٹر رہ چکے ہیں.

دنیش شرما
بھارتیہ جنتا پارٹی کے قومی نائب صدر دنیش شرما فی الحال لکھنؤ کے میئر ہیں.
دنیش شرما کو اگست 2014 میں بھارتیہ جنتا پارٹی کا قومی صدر بنایا گیا تھا.
1964 میں پیدا ہوئے 53 سالہ دنیش شرما لکھنؤ یونیورسٹی میں پروفیسر ہیں.

uttar pradesh

شرما پہلی بار 2008 میں لکھنؤ کے میئر منتخب کئے گئے تھے. 2012 میں وہ دوبارہ میدان میں اترے اور پھر جیتے.
انہوں نے اپنے حریف کانگریس کے اس وقت کے امیدوار نیرج بورا کو ایک لاکھ ستر ہزار سے زیادہ ووٹوں سے شکست دی.
یہ بھی بتاتے چلیں کہ حالیہ اسمبلی انتخابات میں نیرج بورا بی جے پی امیدوار کے طور پر لکھنؤ شمال سے رکن اسمبلی منتخب کئے گئے ہیں.

uttar pradesh